Kai Baar Tasawar Main: Urdu Nazm by Maria Ashfaque

Kai Baar Tasawar Main: Urdu Nazm by Maria Ashfaque

 

کئی بار تصور میں مرے اشک نے آکے
پوچھا ہے مجھسے چہرے پے مسکان سجا کے

بے گھر کیا ہے تم نے ہمیں جان بوجھ کر
ہم تم سے جڑے تھے ہمیں رکھنا تھا بچا کے

ساگر ہمارے درد سے ہے مات کھا گیا
ہم جیت گئے جھک گیا وہ ہاتھ اٹھا کے

نالہ نہ تھا زبان پے خاموش رودیئے
اک اشک لے گیا مری تکلیف بہا کے

راقم کو نہیں چاہیئے ہمدرد جہاں سے
ہم بھی گزار لیں کے سبھی درد بھال کے

 ماریہ اشفاق قریشی

sad love ghazal

 

Facebook Comments

You may also like...