Bijliyon Ki Zadd Pe: Urdu Nazm by Hakeem Quraishi

بجلیوں کی زد پر ہیں آشیاں چمن والو

جل رہی ہیں دیکھو تو،بستیاں وطن والو

پتھروں کی بستی میں سنگ اٹھائے لوگوں میں

بے نیاز پھرتے ہو، کانچ کے بدن والو

یاں زقوم اگتے ہیں اور ببول پلتے ہیں

پھول اٹھائے پھرتے ہو، لالہ و سمن والو

بھوکے پیٹ لوگوں کی سسکیاں نہیں سنتے

کچھ تو رحم فرماؤ، بے حساب دھن والو

شور ہے قیامت کا، نیند ہے حرام اب تو

اٹھو اے لحد والو! دوڑو اے کفن والو

ذرہ زرہ جل اٹھا دیکھو میری بستی کا

کیوں خموش بیٹھے ہو, بولو اے گگن والو

حکیم محمد یونس قریشی (قرشی)

 

 

 

adam-wilson-fire-unsplash

 

 

Facebook Comments

You may also like...