Odessa III: Poem by Kokab Ali

Odessa III: Poem by Kokab Ali

 

“اودیسا”

ساتویں برس کا

ساتواں دن اور

یوں لگ رہا ہے

روشنی رو رہی ہے

دئیے بجھ گئے ہیں

اجنبی زمین پر

وقت اس قدر تیز بھاگا

!کہ حیرت کا منہ پھٹ گیا ہے

کوکب علی

 

City on Odesa Ukraine by Kokab Ali

 

 

Facebook Comments

You may also like...