Ghar Ashaab e Kahaf – Urdu Nazm by Noor ul Huda Shah

Ghar Ashaab e Kahaf – Urdu Nazm by Noor ul Huda Shah

دل چاہتاہے
غاراصحاب کہف میں جاکرسوجاؤں
جب نیند سےاٹھوں
میرا زمانا گزرچکاہو
میرےسکےکھوٹےہوچکےہوں
میری بات کوئی ناسمجھتاہو
مجھےکوئی نہ جانتاہو
رب سےپوچھوں
بتاکہاں جاؤں
رب کہے
تیرےزمانےاب نہیں رہے
انسان سبھی مرچکے
صرف ہجوم زندہ ہے
جنون زندہ ہے
تولوٹ جا
غاراصحاب کہف میں پھرسےجاکرسوجا

Ghar Ashaab e Kahaf - Urdu Nazm by Noor ul Huda Shah

 

Facebook Comments

You may also like...