Baith Ke Paas Woh Mere: Urdu Ghazal by Shahida Kanwel

Baith Ke Paas Woh Mere: Urdu Ghazal by Shahida Kanwel

بیٹھ کے پاس وہ میرے دیر تلک دیکھا کرتا تھا
بن کہے وہ میرے ہر الفاظ کو سمجھ جایا کرتا تھا

پھر زندگی نے عجب اک موڑ کاٹا کہ وہ شخص
بیچ راستے میں نگاہ چرا کر وہ گزر جایا کرتا تھا

ملی جب اسے ایک دن میری موت کی خبر
وہ بار بار لیپٹ کے میری تصویر سے رویا کرتا تھا

عجب کشمکش رہی اس داستان محبّت میں کنول
وہ جو کھبی پکارنے پر بھی نہ پلٹا قبر میری پر سویا کرتا تھا

 

Urdu Ghazal

 

Facebook Comments

You may also like...