Mera Kashmir: Urdu Poem by Fatima Yasin

Mera Kashmir: Urdu Poem by Fatima Yasin

میرا کشمیر

میرا کشمیر پکار رہا ہے کب سے
کہ آذادی چاہئے اُسے کب سے

بچا کر اُسے دشمن کی میلی نگاہ سے
سنبھال کیوں نہیں رہےاُسے کب سے

کون آئے گا اب برہان وانی بن کر
کہ انتظار کر رہا ہے وہ کب سے

لاکھوں معصوموں کے قتل پر ،
خون کے آنسو رو رہا ہے وہ کب سے

کہ حفاظت کرتا نہیں کوئی اس کی
کوئی تو بچالو کہہ رہا ہے وہ کب سے

میرا کشمیر پکار رہا ہے کب سے
کہ آذادی چاہئے اسے کب سے

 

 

Facebook Comments

You may also like...