Salamat Raho: Urdu Nazm by Tariq Iqbal Haavi

Salamat Raho: Urdu Nazm by Tariq Iqbal Haavi

سلامت رہو، رب عمریں بڑھائے
کرو جو تمنا، وہ پوری ہو جائے
جنم دن مبارک۔۔۔
جنم دن مبارک۔۔۔
بچپن سے لے کر، آج تلک میں
یہ رسمی  جملے، سنتا آیا
اِن اُڑتے جَھڑتے سالوں میں
بہت سے سپنے بُنتا آیا
بچپن سے اچھے جیون کے
جو سپنے ذہن پہ لادے ہیں
نِصف عمر کٹی اور یہ اب تک
ادھورے ہیں اور آدھے ہیں
تعبیروں کی رفتار ہے کم
سانسوں کی رفتار زیادہ ہے
جب فاصلہ ہے آدھے کا
تو اب میرا یہ ارادہ ہے۔۔۔
بس اسی لئے یہ سوچا ہے
نئے سپنے اب نہ دیکھوں گا
جو آدھے ادھورے رہ گئے ہیں
ان کی تکمیل کا سوچوں گا
تاوان لاحاصل جیون کا۔۔۔۔
میں تھک گیا بھرتے بھرتے
سب کو خوش رکھنے کی کوشش
میں تھک گیا کرتے کرتے۔۔۔
(طارق اقبال حاوی)

 

Urdu Ghazal - Angele Kamp at Unsplash

 

Facebook Comments

You may also like...