Diwaron Pe Kya Likkha Hai – Ghazal by Nadia Umber Lodhi

Ghazal by Nadia Umber Lodhi

Ghazal by Nadia Umber Lodhi

نادیہ عنبر لودھی  – غزل

دیواروں پہ کیا لکھا ہے
شہر کا شہر ہی سوچ رہا ہے

غم کی اپنی ہی شکلیں ہیں
درد کا اپنا ہی چہرہ ہے

عشق کہانی بس اتنی ہے
قیس کی آنکھوں میں صحرا ہے

کو زہ گر نے مٹی گوندھی
چاک پہ کوئی اور دھرا ہے

عنبر تیرے خواب ادھورے
تعبیروں کا بس دھوکا ہے

diwaron pe kya likkha hai
shahr kā shahr hī soch rahā hai

ġham kī apnī hī shakleñ haiñ
dard kā apnā hī chehra hai

ishq kahānī bas itnī hai
qais kī āñkhoñ meñ sahrā hai

kūza-gar ne miTTī gūñdhī
chaak pe koī aur dharā hai

‘amabar’ tere ḳhvāb adhūre
ta.abīroñ kā bas dhokā hai
تان

SUGGESTED FOR YOU

Comments

comments

You may also like...