سلگتی خواہشیں – Urdu Poem by Urooj Nisar


 سلگتی خواہشیں

یہ سلگتی ہوئی  سی خواہشیں

 میرے وجود  کو ہیں جلا رہیں

کہ رفتہ رفتہ سے جو یہ ہیں

میری روح میں سما رہی

بے قراری بڑھتی ہی جائے

کہ  سلسلہ خواھش تھمے نہیں

حدی و بے حدی کی جنگ یہ

طمع دل نے ہے فتح کی

اس فتح نے بھی بس کیا ہے اشکبار

کہ صدا تو جہاں می کچھ رہا نہیں

ملتا نہیں مکمل جہاں یہ کسی کو

کہ یہ بھی خدا ہی کی خدائی ہے

 

 


Comments

comments

You may also like...